6

اونچی ایڑی —صحت کی دشمن

 

اونچی ایڑی کا جوتا پہنی ہوئی کسی خاتون سے دریافت کیجئے کہ وہ اونچی ایڑی کے جوتے کیوں پہنتی ہیں؟ وہ آپ کو مسکراکر بتائیں گی کہ یہ ان کی شخصیت کو دلکش بناتے ہیں۔
لیکن کیا آپ کو معلوم ہے کہ آپ کی اونچی ایڑی جلد یا بدیر آپ کو جسمانی تکلیف اور درد کے نزدیک لے جارہی ہے۔
اونچی ایڑی سے آپ شاید نرالی تو نظر آسکتی ہیں ، لیکن آپ کو یہ بھی معلوم ہونا چاہئے کہ یہ ایڑیاں آپ کی جسمانی صحت کو تباہ کرسکتی ہیں۔ دراصل اونچی ایڑی آپ کے پورے جسم کے وزن کو آگے کی جانب دھکیلتی ہے، جس کے باعث آپ کے جسم کا پورا وزن تلوے کے بجائے پائوں کی گیند پر ٹکا رہتا ہے۔ آپ کی کمر دبائو سے محراب بن جاتی ہے اور سینہ آگے کی جانب جھکنے لگتا ہے۔ اونچی ایڑی جسم کی قدرتی سیدھ کو نہ صرف تبدیل کرتی ہے بلکہ کمر، گردن ، کولہوں، پنڈلیوں اور پائوں میں سخت کھنچائو بھی پیدا کرنے کا باعث بنتی ہے۔ اسی وجہ سے اونچی ایڑی پہننے والی خواتین گھٹنوں کے درد، جلد کی سختی، تلوے میں درد اور ٹخنے کے جوڑوں میں درد جیسے مسائل کا شکار ہوسکتی ہیں۔ ایک طویل عرصے تک اونچی ایڑی کا استعمال آپ کو گٹھیا اور اعصابی درد کی مصیبت میں مبتلا کرسکتا ہے۔
آپ کو یہ جان کر حیرت ہوگی کہ دو انچ سے زائد ایڑی آپ کے جسم کے پورے پٹھوں کے کھنچائو کا باعث بن سکتی ہے ۔ بعض اوقات خون کی نالیوں کو سکیڑ کر پٹھوں اور دماغ کو خون کی فراہمی محدود بھی کرسکتی ہے۔اگر آپ دیر تک اونچی ایڑی پر کھڑی رہیں تو اس سے جسم میںآکسیجن کے بہائو میں اور دماغ کو خون کی فراہمی میں کمی واقع ہوسکتی ہے۔ جس کے نتیجے میں تھکن کے احساس کے ساتھ ساتھ آپ دماغی تنائو کا شکار بھی ہوسکتی ہیں۔
اونچی ایڑی والے جوتے پہننے سے آپ کے جسم کا مرکزثقل تبدیل ہوجاتا ہے۔ اسے زیادہ دیر تک پہننا آپ کی پنڈلی کے پٹھوں کو چھوٹا بھی کرسکتا ہے۔ اس میں کوئی شک نہیں کہ نوکیلی ایڑی خواتین کو جسمانی عوارض کا باعث بنا رہی ہے۔ اگر خدا نخواستہ آپ کو چلتے میں ٹھوکر لگ جائے اور ٹخنے میں موچ آجائے تو اونچی ایڑی آپ کو فیشن کی ایک بڑی قیمت ادا کرنے پر مجبور کرسکتی ہے۔
ممکن ہے اب بھی کچھ خواتین خطرات جاننے کے باوجود سپاٹ جوتوں کے بجائے اونچی ایڑی کے جوتوں کا ہی انتخاب کریں۔ اگر آپ محسوس کرتی ہیں کہ آپ آسانی سے اونچی ایڑی کے جوتوں کا استعمال ترک نہیں کرسکتیں تو آپ کم از کم اپنے جسم کو پہنچنے والے نقصان کو کم کرلیں۔ اپنے پائوں، ٹانگوں اور کمر کو کھنچائو سے بچانے کے لئے اونچی ایڑی والے جوتے پہن کر ایک وقت میں دو میل سے زائد نہ چلیں اور ایڑی کی بلندی دو انچ تک رکھنے کی کوشش کریں۔ یاد رکھئے ، بلکہ ذہن نشین کرلیجیے کہ ایڑی کی زیادہ بلندی آپ کے جسم کے لئے بدترین ہے۔
امریکی فزیکل تھراپی ایسوسی ایشن کے مطابق تین انچ بلند ایڑی ایک انچ کی ایڑی کے مقابلے میں سات گنا زیادہ کھنچائو پیدا کرتی ہے۔ لہٰذا وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ رفتہ رفتہ اپنی ایڑی کی بلندی میں تخفیف کرتی جائیں۔ بالآخر صرف خاص خاص مواقع تک اسے محدود رکھیں۔ ایڑی کی بلندی بدلنے سے آپ کو تکلیف کی روک تھام میں مدد ملے گی۔
اگر آپ دیگر فیشن زدہ خواتین کی طرح اونچی ایڑی کے جوتے پسند کرتی ہیں تو ہمارا مشورہ ہے کہ اپنے گھٹنوں، ٹخنوں اور پنڈلیوں کے پٹھوں کے درد کو بالکل نظرانداز نہ کیجئے اور نہ ہی اسے معمولی تکلیف سمجھ کر خاموشی سے برداشت کیجئے۔
اگر آپ حاملہ ہیں تو آپ کو ہرممکن اونچی ایڑی کے جوتوں کے استعمال سے گریز کرناچاہئے۔ دورانِ حمل ایک انچ بلند آرام دہ جوتے استعمال کریں۔ یہ آپ کی کوکھ میں نشو ونما پانے والے بچے کے اضافی وزن کو سنبھالنے کے ساتھ ساتھ آپ کی ریڑھ کی ہڈی، جوڑوں اور پٹھوں کو بہتر شکل میں رکھتے ہیں۔
یہ عام فہم بات ہے کہ اگر آپ کمر کے درد میں مبتلا ہیں تو عموماً اس کا واحد سبب ایک طویل عرصے سے تکلیف دہ اونچی ایڑی کے جوتوں کا استعمال ہوتا ہے۔ یہ بات سمجھ سے بالاتر ہے کہ ان تمام تکالیف کے باوجود خواتین ہمیشہ اونچی ایڑی کے جوتوں کے استعمال کی شوقین رہی ہیں۔ اگر آپ ان تمام جسمانی تکالیف کے باوجود اپنی الماریوں سے اونچی ایڑی کے جوتے ختم کرنے کی خواہشمند نہیں تو براہ کرم ان کا استعمال محدود سے محدود تر کردیں اور ہمیشہ کھلے پنجوں والا جوتا خریدیں۔

شیئر کیجیے
Default image
اسرار ایوبی

تبصرہ کیجیے