کیا آپ اچھی پڑوسن ہیں؟

اچھا پڑوس نعمت ہے۔ اگر اچھے ہمسائے مل جائیں تو بہت سے مسائل پیدا ہونے سے پہلے ہی حل ہوجاتے ہیں۔ سبھی کی خواہش ہوتی ہے کہ انہیں اچھے ہمسایے ملیں۔ یہ خواہش بہ آسانی پوری ہوسکتی ہے اگر آپ خود اپنے ہمسایوں کے لیے اچھا بن جائیں۔ اگر آپ اپنے پڑوسیوں کے ساتھ مثبت اور خوش گوار رویہ اپنائیں گی تو توقع رکھیے کہ آپ کو ان کی طرف سے ویسا ہی رد عمل ملے گا۔ پڑوسن سے جب بھی سامنا ہو تو سلام دعا کرنے میں پہل کی کوشش کریں۔ اچھے تعلقات استوار ہونے اور بے تکلفی کی فضا قائم ہوجانے کے بعد بھی اس بات کا خیال رکھیں کہ ہمسائی سے اس کے انتہائی ذاتی معاملات پر گفتگو نہ کریں۔ یہ بات اسے ناگوار بھی گزر سکتی ہے۔ پڑوسنوں سے ہمیشہ صرف عمومی دلچسپی کے معاملات پر بات کیجیے۔ مثلا روز مرہ کی مصروفیات، کھانے پکانے، دینی معاملات سیاست، عبادات کے ساتھ ساتھ ملک اور شہر کی صورت حال، ٹی وی پروگرام وغیرہ اور اس قسم کی دیگر باتیں۔ البتہ اختلافی یا نجی معاملات پر گفتگو سے پرہیز کریں۔

اچھی پڑوسن کی حیثیت سے ہمسائیوں کا دکھ سکھ بانٹے کی کوشش کریں۔ اگر کوئی اپنی داستان غم سنائے تو غور سے اس کی بات سنیں۔ لاتعلقی اور سرد مہری کا رویہ اختیار نہ کریں۔ بعض عورتیں بے حد باتونی ہوتی ہیں اور دوسروں کی بات سننے میں دلچسپی کا مظاہرہ نہیں کرتیں۔ آپ ایک اچھی سامع بن کر ان کے دل جیت سکتی ہیں۔ خیال رہے کہ جب آپ خود گفتگو کریں تو اختصار سے کام لیں۔ اپنی گفتگو دلچسپ بنانے کے لیے حس مزاح اور شگفتہ بیانی سے کام لیں۔ یہ اندازِ گفتگو یقینا آپ کی پڑوسن کو متاثر کرے گا۔

اچھی پڑوسن میں یہ خوبی بھی ہوتی ہے کہ وہ ہر طرح کی غیبت سے بچتی ہے۔ آپ اپنی پڑوسن کے ساتھ کسی کی غیبت میں ہرگز شریک نہ ہوں۔ غیبت کا مقصد کسی فرد کی اس کے پیٹھ پیچھے برائی کرنے کے علاوہ اور کچھ نہیں ہوتا۔ عام طور پر جہاں خواتین اکٹھی ہوتی ہیں وہاں غیبت ضرور ہوتی ہے۔ اچھی ہمسائی ہونے کی حیثیت سے آپ کو نہ صرف خود اس قبیح فعل سے بچنا چاہیے بلکہ اپنی پڑوسنوں کو بھی اس سے دور رکھنے کی کوشش کرنی چاہیے مگر غیر محسوس انداز سے تاکہ انہیں برا نہ لگے۔

آپ جو صفات ایک اچھی پڑوسن میں دیکھنا چاہتی ہیں وہ سب اپنے اندر پیدا کرنے کی کوشش کریں۔ اپنی پڑوسن کی کامیابی اور خوشحالی کو دیکھ کر خوش ہونا سیکھیں۔ اسی طرح اسکول، کالج یا عملی زندگی میں اس کے بچوں کی کامیابی پر کھلے دل سے اسے مبارک باد دیں۔ حسد بالکل نہ کریں۔ اس سے عاقبت اور صحت دونوں کے خراب ہونے کا اندیشہ ہوتا ہے۔

اچھے ہمسایے ایک دوسرے کا خیال رکھتے ہیںـ۔ دکھ درد میں ایک دوسرے کا ساتھ دیتے ہیں۔ ان کے کسی عمل سے ایک دوسرے کو تکلیف نہیں پہنچتی۔ وقت پڑنے پر ایک دوسرے کے کام آتے اور ایک دوسرے کی مدد کرتے ہیں۔ اچھی پڑوسن کی حیثیت سے آپ کو بھی ان باتوں پر عمل کرنا چاہیے۔ اپنے پڑوسیوں کو کسی قسم کی تکلیف نہ دیں، ہنگامی صورت حال درپیش ہوجائے جیسے کوئی بیمار ہے، کسی کو فوری طور پر اسپتال لے جانا ہے یا کوئی اور مسئلہ ہے تو اپنی استطاعت کے مطابق مدد ضرور کریں۔ یہ مدد مالی بھی ہوسکتی ہے اور اخلاقی بھی۔ اگر پڑوسیوں کے ساتھ آپ کے تعلقات اچھے اور دوستانہ ہیں تو عین ممکن ہے کہ وہ خود آپ سے مدد اور تعاون کی درخواست کریں تو پوری ایمان داری اور خلوص کے ساتھ مشورہ دیں اور راہ نمائی کریں۔ ہمیشہ مثبت سوچ رکھیں اپنے لیے بھی اور دوسروں کے لیے بھی۔

اپنے پڑوسیوں کے ساتھ ہمیشہ اخلاق سے پیش آئیں۔ گھر میں کوئی اچھی چیز پکے یا بازار سے لے کر آئیں تو قریب ترین پڑوسی کو بھی پیش کریں۔ اس سے آپس میں محبت بڑھتی ہے۔ اچھی پڑوسن بننا کوئی مشکل نہیں، بس آپ اپنے اندر وہ ساری صفات پیدا کرلیں جو اپنی ہمسائی میں دیکھنا چاہتی ہیں۔lll

شیئر کیجیے
Default image
نسرین اختر

Leave a Reply