شہد اور دار چینی سے بیماریوں کا علاج

شہد اور دار چینی کا استعمال صدیوں سے کیا جا رہا ہے کیوں کہ دونوں میں بے پناہ فوائد پوشیدہ ہیں جنہیں باہمی طورپر مختلف بیماریوں کے علاج کے لیے موثر سمجھا جاتا ہے خاص طور پر یونانی اور آیور ویدک طریقہ علاج میں تو اس کی کہیں زیادہ اہمیت ہے۔ سائنس داں بھی اس بات سے اتفاق کرتے ہیں کہ شہد ایک موثر چیز ہے جس کے مابعد استعمال کسی قسم کے خطرناک اثرات بھی نہیں ہیں۔ مشرق میں تو برسہا برس سے شہد اوردار چینی کو ملا کر مختلف بیماریوں کا علاج کیا جاتا رہا ہے مگر اب مغرب میں ہونے والی تحقیق سے بھی یہ بات ثابت ہوگئی ہے بعض بیماریوں کے لیے شہد اور دار چینی کا استعمال جادو اثر ہوتا ہے۔ ہم اپنے قارئین کے لیے یہاں ایسی چند بیماریوں کا تذکرہ کر رہے ہیں جو کہ محض دار چینی اورشہد کو باہم ملا کر کھانے سے دور ہوسکتی ہیں۔

نقرس یا گٹھیا

کسی پیالی میں ایک حصہ شہد اور دو حصے نیم گرم پانی ڈال کر اس میں ایک چائے کا چمچ دار چینی پاؤڈر حل کرلیں اور اس آمیزے کو جسم کے ان حصوں پر لگا کر مالش کریں جہاں کھنچاؤ کی کیفیت پید اہو رہی ہے۔ اگر اسے باقاعدگی سے استعمال کیا جاتا رہے تو یہ طریقہ خاصی حد تک مددگار ثابت ہوسکتا ہے خصوصاً ان مریضوں کے لیے جو انتہائی شدید نوعیت کے نقرس میں مبتلا ہیں۔

منہ کی ناگوار بو

جنوبی امریکی عام طور پر ایک گلاس میں نیم گرم پانی بھر کے اس میں ایک چائے کا چمچ شہد اور دار چینی حل کر کے غرارہ کرتے ہیں اور کیے جانے والے اس عمل سے سارا دن سانس خوش گوار رہتی ہے۔

مثانے میں انفیکشن

دو چائے کے چمچ دار چینی پاؤڈر میں ایک چائے کا چمچ شہد ملا کر ایک گلاس نیم گرم پانی میں حل کر لیں اور جب تک افاقہ نہ ہو ہر روز پی لیا کریں کیوں کہ یہ مثانے سے جراثیم کو تباہ کر ڈالتی ہے۔

سرطان

جاپان اور آسٹریلیا میں ہونے والی ایک حالیہ تحقیق میں انکشاف کیا گیا ہے کہ شہد اور دار چینی کو معدے اور ہڈیوں کے سرطان میں استعمال کیا جاسکتا ہے۔ ان امراض میں مبتلا مریض ایک کھانے کا چمچ شہد لے کر اس میں ایک چائے کا چمچ دار چینی پاؤڈر ملائیں اور اسے ایک گلاس پانی میں حل کرلیں۔ ایک ماہ تک دن میں تین مرتبہ پینے سے مرض دور ہوجائے گا۔

کولیسٹرول

دو کھانے کے چمچ شہد اور تین چائے کے چمچ دار چینی پاؤڈر کو 16 اونس پانی میں حل کریں جس کے پینے سے جسم میں موجود خون سے کولیسٹرول لیول دس فیصدی تک کم ہوجائے گا تاہم اس کا استعمال ضرورت کے تحت دن بھر تواتر کے ساتھ کرتے رہیں۔

ٹھنڈ کا اثر

ایسے افراد جو عام طور پر ٹھنڈ کے اثرات قبول کر کے نزلہ و زکام میں مبتلا ہو جاتے ہیں، ایک کھانے کا چمچ نیم گرم شہد لے کر اس میں پاؤ چائے کا چمچ دار چینی پاؤڈر شامل کر کے مسلسل تین دن تک کھائیں جس سے کھانسی دور ہونے کے علاوہ بدن کی مختلف جوفوں اور نسیجوں کی بھی صفائی ہوسکتی ہے۔

تھکن

کچھ حالیہ مشاہدات سے یہ بات واضح ہوئی ہے کہ ایسے معمر افراد جو شہد اور دار چینی پاؤڈر کو برابر کی مقدار میں ملا کر استعمال کرتے ہیں زیادہ چست رہتیہیں۔ ایک گلاس پانی میں آدھا چائے کا چمچ شہد حل کر کے اس میں چٹکی بھر دار چینی پاؤڈر چھڑک لیں اور ہر روز ناشتے سے قبل جب کہ دوپہر میں بھی یہی لیں جس سے ہفتے بھر میں جسم کی توانائی بحال ہوجائے گی اور آپ خود کو چست و چالاک محسوس کریں گے۔

بالوں کا گرنا

دنیا میں بال گرنے کی بیماری عام ہے، جس کے لیے بڑا آسان سا نسخہ یہ ہے کہ گرم زیتون کے تیل میں ایک کھانے کا چمچ شہد اور ایک چائے کا چمچ پسی ہوئی دار چینی شامل کر کے پیسٹ سا بنا لیں اور اسے سر کے علاوہ بالوں پر لگائیں، 15منٹ کے بعد سر دھولیں۔ یقینی طور پر کچھ دن کے بعد بال گرنا بند ہوجائیں گے۔

سماعت کی کمی

اگر آپ سماعت کی کمی یا کسی نقص سے دوچار ہیں تو ایک چائے کے چمچ میں برابر کی مقدار سے دار چینی پاؤڈر اور شہد شامل کر کے چند دنوں تک دن میں دو مرتبہ استعمال کریں۔ اس طرح آلہ سماعت سے نجات مل سکتی ہے۔

امراضِ قلب

ایک چمچہ شہد اور آدھا چمچ دار چینی پاؤڈر کا پیسٹ بنائیں اور اسے ڈبل روٹی کے سلائس پر لگا کر تواتر سے ناشتے میں استعمال کریں تو اس سے خون کی شریانیں کھلنے میں مدد ملے گی اور مریض ہارٹ اٹیک سے محفوظ ہوجائیں گے۔

امراض سے بچاؤ

ہر روز شہد اور دار چینی کا استعمال امراض سے بچاؤ کے نظام کو طاقت بخشتا ہے اور جسم بیکٹیریا کے علاوہ وائرس کے حملوں سے بھی بچا رہتا ہے۔ شہد میں بہت بڑی مقدار میں وٹامنز اور آئرن کی موجودگی اسے دوسری غذاؤں سے کہیں بہتر اور موثر ثابت کرتی ہے۔ اس کامبی نیشن کا باقاعدگی سے استعمال خون میں سفید ذروں کو توانائی عطا کرتا ہے جو کہ بیکٹیریا اور وائرس کے حملوں سے لڑتے ہیں۔

بدہضمی

پسی ہوئی دار چینی دو کھانے کے چمچ شہد پر چھڑک کر کھانے سے قبل استعمال کرنے سے تیزابیت کا خاتمہ ہو جاتا ہے اور انتہائی بھاری خوراک بھی آسانی سے ہضم ہوجاتی ہے۔

انفلوئنزا

سائنس دانوں نے یہ بات ثابت کردی ہے کہ شہد میں قدرتی طور پر ایسے اجزائے ترکیبی شامل ہوتے ہیں جو انفلوئنزا کے جراثیم کو ختم کر دیتے ہیں جب کہ یہ فلو میں مبتلا مریضوں کے لیے بھی انتہائی مفید ہے۔

طویل العمری

شہد سے تیار کردہ چائے دار چینی پاؤڈر شامل کر کے پی جائے تو اس سے ذہن کو سکون ملتا ہے جب کہ جسم بھی اطمینان محسوس کرتا ہے جس کی وجہ سے انسان خود کو کم عمر محسوس کرنے لگتا ہے۔ تین کپ پانی ابال کر اس میں چار چائے کے چمچ شہد اور ایک چائے کا چمچ پسی ہوئی دار چینی شامل کریں اور اس کی ایک چوتھائی مقدار دن میں تین سے چار مرتبہ پی لیں جس سے آپ کی جلد نرم اور تازہ رہے گی۔

کیل مہاسے

تین کھانے کے چمچ شہد اور ایک چمچ پسی ہوئی دار چینی لے کر پیسٹ سا بنالیں اور رات کو سوتے وقت اسے مہاسوں پر لگائیں۔ اگلی صبح نیم گرم پانی سے منہ دھولیں۔ اگر یہ عمل دو ہفتے تک ہر روز کیا جاتا رہے تو اس سے مہاسے کم ہوجائیں گے۔

جلد کا انفیکشن

ایگزیما اور اس جیسے دوسرے جلدی امراض کا علاج متاثرہ جگہوں پر برابر کی مقدار میں شہد اور پسی ہوئی دار چینی ملا کر لگانے سے کیا جاسکتا ہے۔

دانت کا درد

ایک چائے کا چمچ دار چینی پاؤڈر اور پانچ چائے کے چمچ شہد لے کر ملائیں اور اس پیسٹ کو درد کرنے والے دانت پر لگالیں۔ یہ عمل ہر روز دن میں تین مرتبہ اس وقت تک کریں جب تک دانت کا درد ختم نہ ہوجائے۔

معدے کی جلن

شہد اور دار چینی کا باہم استعمال معدے کی جلن اور خرابی کے علاوہ معدے کے السر کو دور کرنے میں بھی معاون ثابت ہوتا ہے۔lll

(پاکستانی رسالے ’دسترخوان‘ سے ماخوذ)

شیئر کیجیے
Default image
ماخوذ

Leave a Reply