مشورہ حاضر ہے!

چھائیاں پڑ جاتی ہیں

٭ ستمبر کے مہینے میں چہرے پر چھائیاں پڑ جاتی ہیں۔ کسی کریم یا دوا کا اثر نہیں ہوتا۔ پوری سردیوں میں تکلیف رہتی ہے، بہت پریشان ہوں، کوئی دوا بتائیے۔

٭ بعض دفعہ ماہانہ خرابی سے چھائیاں پڑتی ہیں اور کچھ جلد کی خرابی بھی ہوتی ہے۔ آپ کسی ہومیو پیتھک ڈاکٹر سے دوا لیجیے، آرام آجائے گا۔ مصفی خون دوا لینے سے بھی فرق پڑتا ہے۔ ہمدرد کی صافی لے کر صبح شام پینا شروع کیجیے۔ مزید براں گھی کوار کی شاخ لے کر دن میں دو تین بار داغوں پر ملیے۔ رات کو لگا کر سوجائیے، تھوڑے سے بیسن میں نصف چمچ شہد، آدھے لیموں کا رس، تیل کے چند قطرے اور نصف چمچ دودھ ملا کر اسے ابٹن کی طرح چہرے پر خوب ملیے۔ خشک ہونے پر منہ دھو لیجیے۔ کسی بھی کریم کے بجائے آپ صرف گھیکوار لگائیے۔ صبح نہار منہ ایک پیالی ابلتے پانی میں ایک چمچ شہد اور آدھے لیموں کا رس ڈال کر پیا کیجیے۔ کنو کا موسم ہے، روزانہ تین کنو کھائیے۔ اس کے چھلکے پیس اور سکھا کر ابٹن میں شامل کرسکتی ہیں۔

نومولود بچے کی رضاعت کا مسئلہ

٭ میں ملازمت کرتی ہوں۔ آئندہ ماہ بچے کی پیدائش متوقع ہے۔ صبح سے لے کر شام تک باہر رہتی ہوں۔ شوہر کی آمدنی محدود ہے، نوکری کے بغیر گزارہ نہیں۔ میرے ہونے والے بچے کا مسئلہ کیسے حل ہوگا؟ مجھے صرف تین دن کی چھٹی ملے گی، اس کے بعد کام پر جانا ہوگا۔ وہ لوگ بچے کو ساتھ نہیں لانے دیتے۔ یوں میں بچے کو اپنا دودھ نہیں پلا سکوں گی۔ کیا میں اسے شروع سے اوپری دودھ پر ڈال دوں؟ اپنا دودھ بالکل نہ پلاؤں؟ مجھے مشورہ دیجیے۔

٭ نائلہ بی بی! حمل کے دوران آپ دودھ، پھل، سبزی زیادہ استعمال کریں۔ اپنی لیڈی ڈاکٹر کو دکھا کر چوتھے ماہ سے کیلشیم اور فولاد تجویز کرائیے اور باقاعدگی سے کھائیے۔ آپ کو جب بھی تازہ ناریل ملے، ایک ٹکڑا کھا لیجیے۔ پالک، ساگ، گاجر، مولی، کنو اپنی گذا میں شامل کیجیے۔ گڑ، اخروٹ، مونگ پھلی، بادام کھانے سے فولاد کی کمی دور ہوگی۔

بچے کے لیے بہترین غذا ماں کا دودھ ہے۔ اس میں پروٹین، چکنائی، کیلشیم، فولاد اور حیاتین موجود ہوتے ہیں، جس سے بچے کو مکمل غذا مل جاتی ہے۔ آپ گھبرائیے مت، تین ماہ تک بچے کو اپنا دودھ پلائیے۔ اس کے بعد اسے آپ گائے یا بھینس کا دودھ لگا سکتی ہیں، تیسرے ماہ کے آخری ہفتے میں اسے پہلے دو چمچے دودھ دیجیے اور آہستہ آہستہ بڑھا کر ایک اونس پر لے آئیے۔

بچہ ہضم کرنے لگے تو دودھ کی مقدار بڑھا دیجیے۔ دن میں اسے چار فیڈر اوپر کا دودھ پلائیے اور فیکٹری سے آنے کے بعد اپنا۔ اس طرح آپ دونوں صحت مند رہیں گے۔ فیکٹری جاتے وقت بھی اسے دودھ پلا کر جائیے۔ آنے کے بعد دودھ کی بوتلیں کھولتے پانی میں ابالیے تاکہ کسی قسم کا خطرہ نہ رہے۔ اکثر بوتلوں کی گندگی سے بچہ بیمار ہوتا ہے۔ ڈبے کا دودھ اچھا ہے مگر وہ آپ کو مہنگا پڑے گا۔

نزلہ زکام کا قدرتی علاج

٭ سردیاں شروع ہوتے ہی سب کو نزلہ زکام ہو جاتا ہے۔ ڈاکٹر کی دواؤں سے رک جاتا ہے، مگر بعد میں دماغ بوجھل، سر درد اور معدہ خراب ہو جاتا ہے۔ کیا اس کا کوئی قدرتی علاج ہے؟ دواؤں کے اثرات برداشت ہوتے ہیں نہ جیب اجازت دیتی ہے۔

٭ ایک کہاوت ہے کہ پانچ روز ڈاکٹر کی دوا کھالو، نزلہ ٹھیک ہوجائے گا اور دوا نہ کھاؤ جب بھی ٹھیک ہوجاؤ گے۔ انسانی جسم پرجب تھکن، تفکرات اور افسردگی کا غلبہ ہوتا ہے، اس وقت نزلہ، زکام حملہ آور ہوتا ہے۔ تب قدرتی مدافعی نظام پسپا ہو جاتا ہے۔ ایسے میں سب سے بہتر طریقہ ہے کہ جسم گرم رکھا جائے۔ بستر میں آرام کیا جائے اور گوشت کا سادہ شوربا پیا چائے۔ ہڈیوں اور گوشت کی یخنی مفید ہوتی ہے۔ ہڈیاں اور گوشت پتیلی میں ڈال کر ہلکی آنچ پر پکائیے۔ اس میں دار چینی کا بڑا ٹکڑا، بڑی الائچی، سفید زیرہ، کالی مرچیں اور لونگ ڈالیے۔ چھوٹا سا ادرک کا ٹکڑا اور نمک ملا کر پکنے دیجیے۔ جب ہڈیوں کی خوب یخنی نکل آئے تو اسے مزے سے گرم گرم پی لیجیے۔ دن بھر میں چار پانچ پیالے پی لیجیے۔

بھوک لگے تو اس میں آپ توس بھگو کر کھاسکتے ہیں۔ اسی طرح مونگ کی پتلی دال کا شوربا لے سکتے ہیں۔ پھلوں کا رس بغیر برف کے پیجئے۔ رات کو گرم گرم جوشاندہ لیجیے۔ بنفشے کی چائے بنا کر پی لیں۔ شرط یہ ہے کہ گلا خراب نہ ہو، کھانسی نہ ہو۔ آپ دن میں تین بار گریپ فروٹ چھیل کر نمک اور کالی مرچ چھڑک کر کھا سکتے ہیں۔ پانچ چھ گریپ فروٹ کھانے سے آپ کا معدہ صاف ہوجائے گا۔

پانی زیادہ پیجئے۔ پھر آہستہ آہستہ معمول کی غذا پر آجائیے۔ نزلہ زکام میں دو تین سیال چیزیں استعمال کیجیے۔ اس سے بہت فرق پڑے گا۔ لہسن کی چٹنی بڑے مزے کی بنتی ہے۔ ایک لہسن لے کر چھیل لیجیے۔ اس میں ایک چمچی سفید زیرہ، دس بارہ ہری مرچیں، ادرک کا چھوٹا سا ٹکڑا اور نمک ملا کر پیس لیجیے اور مزے سے کھائیے۔

۵۰۰ ملی گرام وٹامن سی کی ایک گولی بیس دن کھائیے۔ نیم کے بیس پچیس پتے دو گلاس پانی میں ابال کر نیم گرم پانی وضو کی طرح دن میں دو بار ناک میں ڈالیے، اس سے ناک کی جھلی کا ورم ، سرسراہٹ اور نزلہ ٹھیک ہوجائے گا۔

ہونٹوں پر ہریالی

٭ میرے ہونٹ سردی میں بالکل خشک ہوجاتے ہیں، جس سے بہت تکلیف ہوتی ہے۔ اس کے لیے کوئی ٹوٹکہ بتائیے۔

٭ ایک صدیوں پرانا ٹوٹکہ ہے، جس پر سب لوگ عمل کر کے اپنے ہونٹوں کو نرم اور شاداب رکھ سکتے ہیں۔ رات کو سوتے وقت ناف کے اندر تھوڑا سا تیل روزانہ لگائیے۔ سرسں کا تیل ہو یا زیتون کا آپ باقاعدگی سے لگائیے۔ ایک دو ہفتوں میں نمایاں فرق محسوس ہوگا۔

آج کل نت نئی کریموں کے اشتہار اخبارات اور رسائل میں آرہے ہیں۔ بچیاں یہ اشتہار پڑھ کر کریمیں خریدتی اور جب استعمال کرتی ہیں تو الرجی سے چہرے کا ستیا ناس ہو جاتا ہے۔ دانے نکل آتے ہیں، سیاہ دھبے پڑجاتے ہیں، بعض دفعہ چہرے پر بے تحاشا بال نکل آتے ہیں۔ پچھلے دنوں ایک لڑکی میرے پاس آئی، جس کے چہرے پر موٹے موٹے گومڑ تھے، رنگ سیاہ تھا۔ اس نے بتایا کہ ایک مہنگی کریم چہرے کا رنگ گورا کرنے کے لیے خریدی دو تین دن لگائی چوتھے دن چہرے کا رنگ سیاہ ہوگیا، دانے ابھر کر گومڑ بن گئے۔

ہمارے ہاں دیسی طریقہ بہتر ہے۔ بیسن، سرسوں کی کھل، چنبیلی کی کھل، بادام کی کھل، دودھ میں یا پانی میں بھگو کر چہرے پر لگائی جاتی ہے۔ اس سے چہرہ صاف ہوتا ہے اور فالتو بال کم ہوجاتے ہیں۔ آدھے کپ آٹے میں ایک چمچہ گھی اور تھوڑا سا پانی ملا کر سخت پیڑا بنا کر چہرے پر ملنے سے بال بڑھتے نہیں۔

رنگت صاف کرنے کے لیے ایک چمچہ دودھ میں چوتھائی چمچہ لیموں کا رس ملائیے۔ دودھ پھٹ جائے گا۔ اسے چہرے پر اچھی طرح لگائیے۔ آدھے گھنٹے بعد گرم دودھ میں تھوڑی سی روئی ڈبو کر چہرے کو صاف کیجیے پھر منہ دھو لیجیے۔ چند روز میں چہرہ نکھر جائے گا۔

گاجر کے فوائد

میرے بچوں کے پیٹ میں کیڑے بار بار پیدا ہوجاتے ہیں۔ بچے کوئی دوا نہیں کھاتے۔ آپ مجھے کوئی ایسی چیز بتائیے جو آسانی کے ساتھ انھیں کھلا سکوں۔ آپ کی ممنون رہوں گی۔

٭ آج کل گاجر کا موسم ہے۔ آپ یہ پڑھ کر حیران ہوں گی کہ گاجر ہر قسم کے جراثیم ختم کرنے کی صلاحیت رکھتی اور قوت بخشتی ہے۔اس کے پتے بھی طاقت دیتے ہیں۔ پروٹین، معدنیات اور وٹامنز کی موجودگی سے گاجر مقوی غذا ہے۔ اس میں وٹامن اے موجود ہے۔ گاجر کو اپنی غذا میں شامل رکھنا چاہیے۔ کچی گاجر کھانے سے دانت صاف ہوتے ہیں۔ آپ اپنے بچوں کو گاجر کھلائیے۔

بہترین طریقہ یہ ہے کہ گاجر کو دھوکر کدوکش کر ک پیالے میں ڈال دیجیے۔ ایک پیالہ کدوکش کی ہوئی گاجر آپ کے بچے کے لیے کافی ہے۔ ناشتہ میں بچے کو کچھ نہ دیجیے۔ روزانہ صبح نہار منہ بچے کو گاجر کھلائیے۔ کم از کم روز گاجر کے ناشتے سے بچے کے پیٹ سے کیڑے خارج ہوجائیں گے۔

دو تین دن کا وقفہ دے کر دوبارہ بچے کو گاجر کھلائیے۔ صرف دو دن، بے ضرر علاج ہے۔ اس سے آپ کے بچے کی صحت بہتر ہوگی، صالح خون بنے گا اور کیڑے ختم ہوجائیں گے۔

سردی میں جلد خشک

سردیاں ابھی شروع نہیں ہوئیں مگر میری جلد خش ہو رہی ہے۔ منہ دھوتے ہی اکڑ جاتا ہے۔ ہونٹ پھٹے رہتے ہیں۔ کوئی مشورہ دیجیے، میں بہت پریشان ہوں۔

دوسرا خط کنیز فاطمہ نے لکھا ہے۔ ان کو بھی جلد کی تکلیف ہے جو سردی میں زیادہ ہوجاتی ہے۔ دونوں رخسار سرخ ہوکر دہکنے لگتے ہیں۔ دو تین گھنٹے بعد یہ حدت دور ہوتی ہے۔ چہرے، کمر اور سینے پر دانے نکلتے ہیں جن کے کالے نشان رہ جاتے ہیں۔ جلد کی خشکی کی وجہ سے سخت پریشان ہیں۔ سارا چہرہ خراب ہوگیا ہے۔

٭ سردی کے موسم میں حیاتین کی کمی سے جلد خشک ہوجاتی ہے۔ آپ بڑا گوشت نہ کھائیے۔ تازہ سبزیاں اور پھل جو بھی آسانی سے مل جائے، وہ روزانہ کی غذا میں شامل کیجیے۔ گیہوں کے آٹے کا چھان ایک بڑا چمچہ لے کر ایک گلاس پانی میں ہلکی آنچ پر پکائیے۔ پانچ چھ جوش آجائیں تو اتار کر اس میں ایک چمچہ شہد ملا کر پی لیجیے۔ جوش دے کر چھلنی میں چھانیے تاکہ بھوسی علیحدہ ہوجائے، اس طرح حیاتین کی کمی پوری ہوگی۔ چکوترے، کینو، مالٹے روز کھائیے۔ کینو کا چھلکا پیس کر چہرے پر لگائیے۔

ہونٹوں کے پھٹنے سے محفوظ رہنے کے لیے آپ رات کو سوتے وقت ناف میں تیل ضرور لگائیے۔ پابندی سے تیل لگائیں گی تو پوری سردی آپ کو ہونٹ نہیں پھٹیں گے۔ وائٹ پٹرولیم جیلی ہر میڈیکل اسٹور پر مل جاتی ہے۔ منہ ہاتھ دھوکر تھوڑی سی پٹرولیم جیلی لگائیے، یہ سب سے بہترین رہتی ہے۔ پاؤں میں چھاؤں پڑ جائیں تو درد اور تکلیف چین نہیں لینے دیتی، اس کے لیے آپ تھوڑا سا موم کسی گہرے چمچے میں ڈال کر ہلکی آنچ پر پگھلا کر اس میں تھوڑا سا سرسوں کا تیل ملائیں اور پرھ اسے ایڑیووں پر لگائیں، پاؤں نرم ہوجائیں گے۔lll

شیئر کیجیے
Default image
صغیرہ بانو شیریں

Leave a Reply