پسندیدہ اشعار

سانس لینے کی بھی مہلت نہیں دیتی مجھ کو

آپ کی یاد اثر کرتی ہے جادو کی طرح

مرسلہ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔نائلہ پروین

ایک سجدہ نہ ہوا شکر کا ہم سے تو ادا

لوگ پوجا کیے جذبات میں پتھر کیسے

مرسلہ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔مدحت رحمن

غیرت ہو کہ عصمت ہو، ایماں ہو کہ خودداری

ہر چیز کے تاجر ہیں یہ آج کے دھن والے

مرسلہ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔عرشیہ جنید

بندوق سے ہوگی نہ ہی ترشول سے ہوگی

تعمیر وطن ہوگی تو اسکول سے ہوگی

مرسلہ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔فریدہ احمد

تمہارا نامۂ اعمال اک دن پیش رب ہوگا

ڈرو اس وقت سے سورج سوا نیزے پہ جب ہوگا

مرسلہ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔سلیمہ شیخ

وقت کی قدر کرو گے تو سنور جاؤ گے

وقت ہر شے سے زمانے میں بڑا ہوتا ہے

مرسلہ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ عرشی نظام الدین

یہ تو ممکن ہے کہ دیوار گرادیں لیکن

کیسے گرتی ہوئی دیوار سنبھالی جائے

مرسلہ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔واصف اقبال

لے کے بیساکھیاں چڑھتے ہیں جو اونچائی پر

لڑکھڑاتے ہیں تو پھر ایسے سنبھلتے کم ہیں

مرسلہ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔نکہت فردوس

نور سے دل ہمارے بھر دے تو

نیک بندوں میں ہم کو کردے تو

مرسلہ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ انصاری محمد شکیل

دنیا کا اعتبار کریں بھی تو کیا کریں

آنسو تو اپنی آنکھ کا اپنا نہ ہوسکا

مرسلہ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ خلیل انور

قدرت کو ناپسند ہے سختی زبان میں

رکھی نہیں ہے اس لیے ہڈی زبان میں

مرسلہ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔قمر سلطانہ قریشی

شعاع علم و ہنر کی ہمیشہ کام آئی

میری تقدیر جب بھی تیرگی سے گزری ہے

مرسلہ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ قمر عمرانہ

شیئر کیجیے
Default image
شرکاء

Leave a Reply