کڑی پتہّ

جڑی بوٹیوں میں بھر پور غزائیت اور کئی بیماریوں کا علاج پوشیدہ ہے اور جیسے جیسے ان پر تحقیق کا دائرہ بڑھ رہا اس کے حیرت انگیز فائدے سامنے آرہے ہیں ایسی ہی جڑی بوٹیوں میں کڑی پتے کو بھی خاص اہمیت حاصل ہے اوراس میں پوشیدہ انتہائی خطرناک بیماریوں کے علاج نے ماہرین طب کو حیران کردیا ہے کیونکہ یہ اپنے اندر دل کی بیماریوں سے لیکر بالوں کے علاج تک کی بے پناہ خوبیاں رکھتا ہے۔

خون کی کمی کا علاج: کڑی پتہ آئرن اور فولک ایسڈ کا خزانہ ہے اسی لیے خون کی بیماری اینیمیا کا بہترین علاج ہے۔ اینیمیا کی بیماری جسم میں خون اور آئرن کی کمی اور اسے جسم میں جذب کرنے کی صلاحیت میں کمی کی وجہ سے جنم لیتی ہے جب کہ کڑی پتے میں موجود فولک ایسڈ آئرن کو جسم میں جذب کرنے میں مدد دیتا ہے اور اور مزید آئرن بھی بناتا ہے۔

جگر کوبیماری سے بچاتا ہے: ایسے لوگ جو شراب نوشی کرتے ہیں ان کا جگر شدید متاثر ہوتا ہے اور وہ جگر کی کئی بیماریوں میں مبتلا ہوجاتا ہے۔ ایشین جرنل آف فارماسٹیکل اینڈ کلینکل ریسرچ نے اپنی نئی تحقیق میں واضح کیا ہے کہ کڑی پتہ جگر کو آکسیڈیٹو اور کائیمپ فیرول سے بننے والے زہریلے مادوں سے نجات دلاتا ہے جب کہ اس میں موجود وٹامن اے اور سی جگر کے فنکشن کو مزید فعال بنا دیتا ہے۔

بلڈ شوگر کو کنٹرول کرنے میں مدد گار: جرنل آف فوڈ فار نیوٹریشن میں شائع تحقیق میں کہا گیا ہے کہ کڑی پتے خون میں شوگر کا لیول کنٹرول کرنے میں انتہائی مؤثر ہیں جب کہ اس میں موجود فائبر شوگرلیول کو کم کرنے میں بھی مدد دیتا ہے اس کے لیے ہر کھانے میں کڑی پتے کا استعمال کریں اور اسے آپ نہار منہ بھی کھا سکتے ہیں۔

دل کی بیماریوں سے بچاتا ہے: جرنل آف چینی میڈیسن کے مطابق کڑی پتہ خون میں کولیسٹرول لیول کو کنٹرول کرتا ہے یہ کولسیٹرول کو آکسیڈنٹ ہونے سے بچاتا ہے کیوں کہ یہ ڈی آکسیڈنٹ سے بھرپور ہوتا ہے۔

ہاضمے میں مؤثر: کڑی پتے کارمینیٹو سے بھرپور ہوتے ہیں اس لیے یہ بد ہضمی میں انتہائی مؤثر ہے۔ ماہرین طب کا کہنا ہے کہ کڑی پتے میں قبض کے خاتمے کی خوبیاں بھی پائی جاتی ہیں جو معدے کو متوازن رکھتی ہیں۔

کیمو تھراپی کے سائیڈ ایفکٹس کو کم کرتا ہے: ایک تحقیق کے مطابق کڑی پتے میں کیمو تھراپی کے مضر اثرات کو کم کرنے کے حیرت انگیز صلاحیت موجود ہوتی ہے یہ کیمو تھراپی کے دوران کروموسوم کو تباہ ہونے سے بچاتا ہے جب کہ یہ بون میرو کی حفاطت کرتا ہے۔ ایک اور تحقیق کے مطابق کڑی پتے میں کینسر سے بچانے کے عناصر بھی پائے جاتے ہیں۔

سینے اور ناک کی بیماری سے نجات دیتا ہے: کھانسی، سینے کی جکڑن اور نزلے میں کڑی پتہ انتہائی مفید ہے اس میں موجود وٹامن سی، اے اور کائیمپ فیرول میں جلن اور جکڑن کے خلاف کام کرنے والے ایجنٹ ان بیماریوں سے دور رکھتے ہیں۔ سینے کی جکڑن ختم کرنے کے لیے کڑی پتے کے پاؤڈر کا ایک چمچہ شہد میں ملا کر دن میں دو مرتبہ استعمال کریں۔

بالوں کی نشوونما میں مؤثر: کڑی پتے پر کی گئی کئی تحقیق میں اس بات کو تسلیم کیا گیا ہے کہ اس میں بالوں کی نشو ونما کی زبردست خوبیاں پائی جاتی ہیں، بالوں کے گرنے، خشکی، اور وقت سے قبل بالوں کا سفید ہونا جیسی بیماریوں کے خلاف کڑی پتے میں زبردست علاج موجود ہے۔ بالوں کے علاج کے لیے چند کڑی پتے لے کر انہیں ناریل کے تیل میں ڈال کر اچھی طرح پکا لیں اور جب رنگ کالا ہونے لگے تو اتارکر ٹھنڈا کرلیں اور اسے ہفتے میں کم از کم 3 بار لگائیں صرف 15 دن میں اس کے حیرت انگیز نتائج آپ کے سامنے ہوں گے اس کے علاوہ کڑی پتے کو پیس کر اس میں دہی ملا کر اسے بھی بالوں پر لگانے سے بالوں میں چمک آجاتی ہے۔

نا بینا افراد کے لیے ایپ

استنبول: ترکی کی ایک نابینا خاتون نے نابینا افراد کی مدد کے لیے ایک ایپ تیار کی ہے جو ان کے معمولات کو آسان بناسکتی ہے۔

اس جدید ایپ کے ذریعے ترکی کے ترقی یافتہ اور پرہجوم ماحول میں نابینا حضرات آواز کے ذریعے رہنمائی حاصل کرسکتے ہیں اور اپنے مسائل حل کرنے کے علاوہ گھر کے اندر بھی باآسانی کام کرسکتے ہیں اس ایپ کو دوئیگو تایامان نے اپنے ساتھیوں کے ساتھ تیار کیا ہے۔

ترک خاتون تایامان ڈھائی سال کی عمر میں آنکھوں میں رسولی ہونے کی وجہ سے نابینا ہوگئی تھیں۔ تاہم وہ عمر کے ساتھ ساتھ وہ ہمت سے پڑھتی رہیں اور نارمل بچوں کے اسکولوں میں تعلیم حاصل کی۔ لیکن ان کے والدین نے اس کے لیے چھپی ہوئی کتابوں کو ٹیپ ریکارڈر میں ریکارڈ کرکے اسے پڑھنے میں مدد دی اس کے بعد وہ مزید تعلیم حاصل کرکے آگے بڑھتی رہیں۔

کچھ برس قبل تایامان نے ایک موبائل فون ایپ بنائی جسے ترکی زبان میں ہیال اورتاگم ( میرے سپنوں کا ساتھی) کا نام دیا گیا ہے۔ یہ ایپ ٹیکسٹ کو آواز میں تبدیل کرنے کے علاوہ خان اکیڈمی کے کورس، کتابیں، اخبار اور موسیقی کے اسباق کو آواز دیتی ہے جس سے نابینا افراد سن سکتے ہیں۔ پھر اس میں اسپتالوں اور دوا کی دکانوں کی رہنمائی کا آپشن بھی شامل کیا گیا۔ اس کے علاوہ اب اسے ایئرپورٹ، گھر، ریلوے اسٹیشن پر مدد کے قابل بنایا جارہا ہے تاکہ جی پی ایس کے ذریعے یہ اطراف سے آگاہ کرسکے۔

دلچسپ بات یہ ہے کہ اگر کوئی نابینا شخص اس ایپ کے ساتھ کسی دکان یا شاپنگ سینٹر جاتا ہے تو بلیوٹوتھ پیغام کے ذریعے انہیں پہلے ہی معذور شخص کا پتا لگ جاتا ہے اور اسٹاف اس کی مدد کے لیے چوکنا ہوجاتا ہے۔

ترک خاتون کی اس جدید ایجاد نے ترکی میں تیزی سے مقبولیت حاصل کرلی ہے اور تایامان کو امریکی یونیورسٹی میساچیوسیٹس انسٹی ٹیوٹ آف ٹیکنالوجی ( ایم آئی ٹی) کے رسالے ٹیکنالوجی ری ویو کی جانب سے 35 سال سے کم عمر دنیا کے اہم ترین مؤجد کا اعزاز دیا گیا ہے اور ابھی ان کی عمر صرف 25 سال ہے۔lll

شیئر کیجیے
Default image
ماخوذ

Leave a Reply