تازہ شمارہ

  • nov 21 title

نئی تحریریں

لمحۂ فکریہ

باجی! آپ کا دوپٹہ بڑا ہے۔ میرا دوپٹہ چھوٹا ہے۔ کہنیاں ڈھک ہی نہیں رہی ہیں اور نماز پڑھنی ہے مجھے! سمن نے سلام پھیرتے یوں ہی نند کی طرف دیکھ کر پوچھا۔ ہاں ہاں یہ لو مہ جبیں نے فوراً دوپٹہ اتار کر آگے بڑھا دیا اور سمن اسے سر اور ہاتھوں پر لپیٹنے لگی۔ نماز میں سر ڈھکنے کا علم ہم سبھی کو ہےاورسب اس پابندی کامکمل احترام کرنے کی کوشش کرتے نظر بھی آتے ہیں۔ہمارا مشاہدہ ہے کہ آفس میں اکثر خواتین اور گھروں میں بھی نماز کے لیے باقاعدہ بڑی سی چادر علیحدہ رکھتی ہیں۔ لباس فیشن کے مطابق پہنتی ہیںلیکن نماز کے وقت بڑی سی چادر قرینے سے لپیٹ کر کھلے سر کھلی گردن اور کھلے بازو کو چھپا لیتی ہیں کیونکہ ایسا کیے بغیر نماز قبول نہیں ہوگی۔ لیکن افسوس جب ہوتا ہے جب وہ سلام پھیرتے ہی چادر اتار کرلپیٹ دیں اور سترڈھکنےکی…

مجھے بزدل مت کہو!

میرا کام اس قسم کا ہے کہ زیادہ تر وقت سفر میں گزرتا ہے۔ اسی لیے ویگنوں بسوں، ٹیکسیوں اور رکشا والوں سے اکثر واسطہ رہتا ہے۔ اس روز موسم کچھ ابر آلود تھا۔ مجھے گھر بھی جلد جانا تھا، لہٰذا ٹیکسی میں سفر کرنے کا ارادہ کرلیا۔ ٹیکسی اسٹینڈ پہنچا، تو وہاں لوگوں کا ہجوم دیکھا۔ میں بھی اس طرف ہولیا کہ دیکھوں، کیا ماجرا ہے۔ دیکھا ایک ٹیکسی ڈرائیور دوسرے ڈرائیور کو غلیظ گالیاں دے رہا تھا۔ اس کے ہاتھ میں چاقو بھی تھا، جسے وہ لہرا رہا تھا۔ اس کے غلیظ اور اشتعال انگیز الفاظ سن کر کم از کم میں تو اپنے آپ پر قابو نہ رکھ پاتا۔یہ معلوم نہیں ہوسکا کہ بات کیا تھی اور کہاں سے شروع ہوئی، تاہم یہ دیکھ کر میری حیرت کی حد نہ رہی کہ دوسرا ڈرائیور بالکل پرسکون اورخاموش تھا۔ مجھے حیرت اس لیے ہوئی کہ وہ تن و…

عمان میں سفیر نبوت کا اعلانِ حق

۹؍ہجری تک صرف ’عمان‘ کا علاقہ عرب کی واحد ریاست تھی جہاں اسلام کی روشنی نہیں پہنچ پائی۔ وہاں جلندی خاندان مسندِ حکومت پر فائز تھا۔ تب وہاں جیفر بن جلندی کی حکمرانی تھی جو حکومت کے انتظام و انصرام میں اپنے مدبر اور حلیم و فہیم، بھائی عبدبن جلندی کی رائے کو بڑی اہمیت دیتا تھا۔ دونوں بھائیوں میں بے پناہ محبت اور ہم آہنگی تھی۔ حکمرانِ عمان تک اسلام کی پاکیزہ دعوت پہنچانے کے لیے صحابہ کرامؓ سے مشاورت کے بعد حضور اکرمؐ نے حضرت عمروؓ بن عاص کا انتخاب فرمایا۔ پھر تاجدارِ عمان کے نام دستاویز لکھی گئی جسے حضرت ابی بن کعبؓ نے تحریر فرمایا۔ اس پر مہر نبویؐ ثبت کی گئی اور حضرت عمروؓ بن عاص وہ مقدس فرمان لیے عمان روانہ ہوگئے۔ طویل سفر کے بعد منزل پر پہنچے تو سوچ میں پڑگئے کہ بادشاہ تک رسائی کیسےہو؟ آخر ایک مقامی باشندے کے مشورے پر…

نوجوانوں کے نفسیاتی مسائل اور کووڈ 19

وہ افراد جن کی عمر10سے 20سال کے درمیان ہومتعدد جسمانی و جذباتی تبدیلی میں مبتلا ہوتے ہیں۔ ایسے افراد نہ صرف ذہنی و جسمانی بدلائو کا شکار رہتے ہیں بلکہ اپنے اردگرد کے ماحول سے بھی متاثر ہوتے ہیں۔ معاشرتی و معاشی تبدیلیاں، بشمول مالی حالات اور لوگوں کا رویہ، نوجوان دماغ پر اثر انداز ہوتے ہیں یہی وجہ ہے کہ تنگ دستی اور ناروا سلوک نوعمروں کو ذہنی صحت کے مسائل کا شکار بناسکتے ہیں۔ نفسیاتی صحت کو فروغ دینا اور نوعمروں کو منفی تجربات سے بچانا بے حد ضروری ہے ۔ ڈبلیو ایچ او کی اعداد و شمار کی مطابق ہر چھے میں سے ایک نوجوان جس کی عمر10 سے 19 سال ہے ذہنی عارضے کا شکار ہے۔ عالمی سطح پر کی جانے والی ریسرچ کے مطابق 16فیصد بیماریاں اور حادثات میں زخمی اور مرنے والوں کی تعداد10سے19سال کے عمر کے نوجوانوں کی ہے۔ دماغی وجذباتی مسائل جوانی…

مقبول مضامین

سفر

ستمبر 20, 20216 min read

کچن کا استعمال

ستمبر 22, 20215 min read

کل کی فکر

ستمبر 4, 20213 min read